کورونا وبا ختم ہونے کے نزدیک نہیں،عالمی ادارہ صحت

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے سربراہ تیدروس ادھانوم گیبریئسس نے خبردار کیا ہے کہ کورونا وائرس کی نئی لہریں ایک بار پھر یہ ظاہر کرتی ہیں کہ کورونا وبا ختم ہونے کے نزدیک نہیں ہے، اس کا پھیلاؤ بڑھنے کے ساتھ ہی ہمیں فوری محتاط ہوجانا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ وہ فکر مند ہیں کہ کورونا وائرس کیسز کی تعداد بڑھ رہی ہے، جس سے نظام صحت اور ہیلتھ ورکرز پر مزید دباؤ پڑ رہا ہے۔ڈبلیو ایچ او کو رپورٹ کیے گئے کورونا کیسز کی تعداد میں گزشتہ 2 ہفتوں میں 30 فیصد اضافہ ہوا، جس کا سبب اومیکرون ویرینٹ کی ذیلی اقسام اور کورونا پابندیوں کا خاتمہ ہے۔انہوں نے ایک نیوز کانفرنس کو بتایا کہ پھیلاؤ میں اضافے کے ساتھ حکومتوں کو ماسک پہننے اور وینٹیلیشن کو بہتر بنانے جیسے مؤثر اقدامات بھی اٹھانے ہوں گے۔تیدروس ادھانوم نے کہا کہ ‘بی اے 4 اور بی اے 5 جیسی اومیکرون کی ذیلی اقسام دنیا بھر میں کورونا کیسز، ہسپتال میں مریضوں کی تعداد اور اموات میں اضافے کا سبب بن رہی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ ‘کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے حوالے سے نگرانی میں بھی نمایاں کمی آئی ہے، اس کے نتیجے میں مختلف ویرینٹس کے سبب بیماری کی خصوصیات اور اس کی روک تھام کے لیے اقدامات کے اثرات کا اندازہ لگانا مشکل ہوتا جا رہا ہے، مزید برآں ٹیسٹنگ علاج اور ویکسین کو مؤثر طریقے سے استعمال نہیں کیا جارہا ہے’۔انہوں نے کہا کہ ‘وائرس بلا روک ٹوک پھیل رہا ہے اور کئی ممالک اس سے نمٹنے کے لیے نظام صحت پر پڑنے والے بوجھ کو اپنی صلاحیت کے مطابق مؤثر طریقے سے سنبھال نہیں رہے ہیں’۔

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں