کرپشن کے الزامات : خاتونِ اوّل کی دوست فرح خان ملک چھوڑ کر دبئی منتقل

خاتون اول بشریٰ بی بی کی قریبی دوست فرح خان ملک چھوڑ کر دبئی منتقل ہوگئیں، اپوزیشن کی جانب سے ان پر کرپشن کے سنگین الزامات لگائے گئے تھے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ فرح خان اتوار کو وزیر اعظم عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کے معاملے پر اسمبلی تحلیل ہونے کے بعد ملک چھوڑ کر دبئی چلی گئی ہیں۔ ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ ان کے شوہر اس سے قبل ہی ملک چھوڑ چکے تھے۔ مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے الزام عائد کیا تھا کہ وزیر اعظم کی اہلیہ کی دوست نے افسران کی مرضی کے مطابق تعیناتیوں میں بڑے پیمانے پر رقم بٹوری ہے۔ مریم نواز نے اسے ’سب سے بڑا اسکینڈل‘ قرار دیا تھا جس میں 6 ارب روپے کی بدعنوانی کی گئی ہے۔ مریم نواز نے کہا تھا کہ ’میں بشریٰ بی بی کی دوست فرح کا نام لینے کی ہمت رکھتی ہوں، جنہوں نے تقرر اور تبادلوں کی مد میں کروڑوں روپے حاصل کیے اور یہ براہِ راست بنی گالہ (عمران خان کی رہائش گاہ) سے منسلک ہے‘۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ایک بار پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت واپس گھر چلی جائے تو عمران خان اینڈ کمپنی کی دماغ چکرا دینے والی کرپشن کی داستانیں منظر عام پر آئیں گی۔ مریم نواز نے کہا تھا کہ ’6 ارب روپے کے تقرر و تبادلے کے سب سے بڑے اسکینڈل کا تعلق بنی گالہ سے ہے، آنے والے وقتوں میں شواہد منظر عام پر آنا شروع ہوجائیں گے، عمران خان کو ڈر ہے کہ اگر وہ اقتدار سے باہر ہوگئے تو ان کی چوری منظر عام پر آجائے گی‘۔ برطرف گورنر پنجاب چوہدری سرور اور وزیر اعظم کے پرانے دوست علیم خان نے بھی الزام لگایا کہ فرح خان نے سابق وزیر اعلیٰ عثمان بزدار کی مدد سے پنجاب میں کروڑوں روپے لے کر تقرر و تبادلے کروائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں