کراچی میں آن لائن غیر قانونی اسلحہ فروخت کرنےوالےگروہ کے 4کارندے گرفتار

کاؤنٹر ٹیررزم ڈیپارٹمنٹ سندھ نے آن لائن غیر قانونی اسلحہ فروخت کرنے والےگروہ کے 4 کارندوں کو حراست گرفتار کیا ہے۔کراچی میں محکمہ انسداد دہشت گردی کے انچارج راجا عمر خطاب نے پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ اسلحے کی اسمگلنگ اور ان کی غیر قانونی فروخت میں ملوث بین الصوبائی گروہ کے 4 کارندے گرفتار کئے ہیں، جن کے قبضے سے 18 پستول سمیت دیگر اسلحہ و میگزین برآمد ہوئے ہیں۔راجا عمر خطاب نے کہا کہ فیس بک پر اسلحہ کی فروخت کے لئے پیجز بنے ہوئے ہیں، یہ پیجز درہ آدم خیل اور پشاور کے قریب قائم اسلحے کے کارخانوں کے ہیں۔انچارج سی ٹی ڈی نے کہا کہ درہ آدم خیل سے کراچی اسلحہ غیر قانونی طور پر لایا جاتا ہے، غیر قانونی اسلحہ سپلائی کرنے میں کراچی کے دکاندار بھی سہولت کار ہیں۔راجا عمر خطاب نے کہا کہ خریداروں کی ترجیح آٹو میٹنک پستول ہے، آٹو میٹک پستول کلاشنکوف سے زیادہ خطرناک ہے ، درہ آدم خیل سے اسلحہ منگوانے والوں میں سے اکثریت طلبہ کی ہے، اس لئے والدین اپنے بچوں پر نظر رکھیں۔انچارج سی ٹی ڈی نے کہا کہ تفتیش کے دوران اسلحے کے جعلی لائسنس بنانے کا بھی انکشاف ہوا ہے، ان لائنسن پر کیو آر کوڈ بھی ہوتا ہے۔ جس کی وجہ سے بظاہر اصل اور نقل کی پہچان مشکل ہوجاتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں