کراچی:چینی باشندوں کےقتل میں ملوث مجرموں کوکیفرکردار تک پہنچائیں گے،وفاقی وزیرداخلہ

وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنااللہ نے کہا ہے کہ گزشتہ روز کراچی میں ہونے والے دھماکے میں ملوث مجرموں کو بہت جلد کیفر کردار تک پہنچائیں گے۔وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کے ہمراہ کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ چینی حکام سے رابطے میں ہیں، چینی حکام واقعے کے بعد حکومت کی جانب سے کیے اقدامات سے مطمئن ہیں، چینی باشندوں کی حفاظت کو یقینی بنایا جائے گا۔ان کا کہنا تھا کہ کل کے افسوس ناک دھماکے میں 3 چینی باشندے ہلاک ہوئے جبکہ ایک پاکستانی شہری بھی حملے میں جاں بحق ہوا، حملے میں پاک چین دوستی کو ہدف بنایا گیا، چین نے ہمیشہ ہرمشکل وقت میں پاکستان کا ساتھ دیا۔رانا ثنااللہ کا کہنا تھا کہ حقوق کی جدجہد کرنے والے شہری اس طرح کی کارروائیوں میں ملوث نہیں ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ بلوچ طلبا نے لاہور اور اسلام آباد میں بھی احتجاج کیا جو ہمارے علم میں ہے، جو لوگ اپنے حقوق کی بات کر رہے ہیں وہ کسی بھی طرح سے دہشت گردی میں ملوث نہیں ہیں. انہوں نے کہا کہ حقوق کی جدوجہد کرنے والے لوگ پارلیمنٹ میں ہمارے ساتھ بیٹھے ہیں، وہ ہمارے ساتھ بات بھی کرتے ہیں، ان کے گلے شکوے ہیں، وہ سمجھتے ہیں کہ ہماری بات پر توجہ نہیں دی جارہی مگر دہشت گرد عناصر کا اس معاملے سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اس طرح کی دہشت گردانہ کارروائیوں میں ملوث عناصر کے خلاف ہمیں انتظامی اقدامات کرنے ہوں گے اور ہمیں سیکیورٹی فورسز کو اس قابل بنانا ہوگا کہ وہ اس طرح کے عناصر کا قلع قمع کریں جو ملک کو عدم استحکام سے دوچار کرنا چاہتے ہیں اور ان کے پیچھے کچھ بیرونی قوتیں بھی ہیں جو چاہتی ہیں کہ پاکستان انارکی اور افتراتفری کا شکار ہو کر کمزور ہو۔ ان کا کہنا تھا کہ نیکٹا کو فعال کرنے کے لیے وزیراعظم شہباز شریف چاروں صوبوں کے ساتھ رابطے میں ہیں، نیکٹا کی میٹنگ میں تمام اسٹیک ہولڈرز موجود ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ امن و امان کی صورتحال یقینی بنانے کے لیے سندھ حکومت سے ہر طرح کا مکمل تعاون کیا جائے گا، کراچی کو پر امن شہر بنائیں گے۔وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف پوری قوم متحد ہے، دہشت گردی کے ایسے اقدامات کے تدارک کے لیے سخت اقدامات کرنے ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان جھوٹ اور فراڈ کا بیانیہ بنانے کی کوشش کر رہے ہیں، جھوٹ کا بیانیہ پیش کرنے کی ناکام کوشش کرکے خود کو بہت مقبول سمجھ رہے ہیں کہ اب ان سے کوئی سوال نہیں کیا جائےگا۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کے عوام الیکشن میں ان سے ملک کی تباہی ، معیشت کی بربادی اور مہنگائی کا سوال کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں