کراچی:اسٹریٹ کرائم کی روک تھام کیلئےایس ایس یوکمانڈوز تعینات

کراچی میں بڑھتےہوئے اسٹریٹ کرائمز کو مدنظر رکھتے ہوئے شہر میں ایس ایس یو کمانڈوز کی تعیناتی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ڈی آئی جی سیکیورٹی اینڈ ایمرجنسی ڈویژن مقصود احمد کی مطابق ایس ایس یو کمانڈوز کی تعیناتی کا فیصلہ وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ کے خصوصی احکامات پر کیا گیا۔ایس ایس یو کمانڈوز کےموٹرسائیکل اسکواڈ کو ہاٹ اسپاٹس پرتعینات کیا گیا ہے۔ اس سے قبل بھی کراچی میں بڑھتے ہوئے اسٹریٹ کرائمز کو مدنظر رکھتے ہوئے اسپیشل سیکیورٹی یونٹ (ایس ایس یو) نے 20 جوانوں پر مشتمل ایک اسکیٹنگ فورس تیار کی تھی۔ اس اسکیٹنگ فورس کا مقصد ٹریفک جام میں پھنسے شہریوں کو اسٹریٹ کرمنلز سے تحفظ فراہم کرنا تھا۔ اکثر یہ بات مشاہدے میں آئی کہ مسلح ملزمان ٹریفک جام میں پھنسے شہریوں کو با آسانی لوٹ کر فرار ہو جاتے تھے۔ اس حوالے سے جب پولیس کو آگاہ کیا جاتا تو جب تک پولیس موبائل جائے وقوعہ پر پہنچتی، ملزمان فرار ہو جاتے تھے۔ اسی وجہ کو مدنظر رکھتے ہوئے گزشتہ سال فروری میں ایس ایس یو کی اسکیٹنگ فورس قیام میں آئی اوراس فورس کا باقاعدہ ایک یونٹ بھی قائم ہوا۔ اس یونٹ کے سربراہ ایس پی فرخ علی نے بتایا کہ اس فورس کی ٹریننگ پر کئی ملین روپے خرچ ہوئے۔ اس فورس کی افادیت بتاتے ہوئے انہوں نے کہا تھا کہ کسی بھی پر ہجوم مقام پر گاڑی پر سوار پولیس اہلکارو کے مقابلے میں اسکیٹرز باآسانی پہنچیں گے۔اہلکاروں کوچھوٹے ہتھیار دیئے گئے ہیں تا کہ اگر ملزمان سے مقابلہ ہو تو اس کے نتیجے میں جائے وقوعہ پرموجود عام شہری محفوظ رہیں۔ سیاہ لباس میں ملبوس اسکیٹنگ فورس میں خواتین اہلکار بھی شامل تھیں۔ان کو پہلی دفعہ پاکستان سپرلیگ کےچھٹے ایڈیشن (2021) میں نیشنل اسٹیڈیم کے باہردیکھا گیا۔ کچھ عرصے بعد یہ اہلکار کراچی کے ساحل ( سی ویو) پر بھی دکھائی دئیے تاہم اس کے بعد ان کا کوئی اتاپتہ نہیں تھا۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں