پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافےپراحتجاج،قازقاستان کےصدرنےکابینہ برطرف کردی

قازقستان جاری احتجاج کے باعث صدر نے کابینہ کو برطرف کردیا ہے۔ قازقستان کے صدر قاسم جومارت نے کابینہ کو برطرف کرکے ملک کے سب سے بڑے شہر الماتے میں ایمرجنسی نافذ کردی ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق قازقستان میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے بعد شدید احتجاج کیا جارہا تھا جس کے بعد صدر نے کابینہ کو برطرف کیا اور وزیراعظم کا استعفیٰ بھی منظور کرلیا ہے جب کہ صدر نے قائم مقام کابینہ کو فوری طور پر ایل پی جی کی قیمتیں بحال کرنے کا حکم دیا ہے۔اس کے علاوہ صدر نے قائم مقام کابینہ کو حکم دیا کہ وہ پیٹرول، ڈیزل اور عام شہریوں کے استعمال کی اشیاء کی قیمتوں کو کنٹرول میں رکھنے کے لیے اپنا دائر کار بڑھائے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق گزشتہ رات الماتے میں پولیس اور ہزاروں مظاہرین کے درمیان تصادم ہوا جس میں مظاہرین نے حکومت سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا تھا، پولیس اور مظاہرین کے تصادم کے بعد صدر نے کابینہ کو برطرف کیا۔پولیس اور مظاہرین کے تصادم میں پولیس نے آنسو گیس اور اسٹن گرینیڈ کا بھی استعمال کیا۔قازقستان میں کشیدہ صورتحال کے باعث میسنجر ایپلی کیشن، ٹیلی گرام اور واٹس ایپ سمیت دیگر سوشل میڈیا ایپلی کیشنز کو بند کردیا گیا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں