وزیراعلیٰ پنجاب کےمعاملے پرچیف جسٹس فل کورٹ بینچ تشکیل دیں،حکمران اتحاد کا مطالبہ

مسلم لیگ ن، پیپلز پارٹی اور جے یو آئی ف سمیت دیگر جماعتوں پر مشتمل حکمران اتحاد نے عمران خان کے الزامات اور تنقید پر شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے چیف جسٹس پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب کے حوالے سے دائر درخواستوں پر فل کورٹ بینچ تشکیل دیا جائے۔حکمران اتحاد کی جانب سے جاری مشترکہ متفقہ اعلامیے میں چیف جسٹس پاکستان سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب سے متعلق مقدمے کی سماعت فل کورٹ بینچ کرے، سپریم کورٹ بار کی نظرثانی درخواست، موجودہ درخواست اور دیگر متعلقہ درخواستوں کو ایک ساتھ سماعت کے لیے مقرر کیا جائے کیونکہ یہ بہت اہم قومی، سیاسی اور آئینی معاملات ہیں۔اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ عمران خان بار بار سیاست میں انتشار پیدا کر رہے ہیں، عمران خان کے انتشار کا مقصد احتساب سے بچنا، اپنی کرپشن چھپانا اور چور دروازے سے اقتدار حاصل کرنا ہے۔ حکمران اتحاد کے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ آئین نے مقننہ، عدلیہ اور انتظامیہ میں اختیارات کی واضح لکیر کھینچی ہوئی ہے، ایک متکبر آئین شکن فسطائیت کا پیکر اختیارات کی لکیر کو مٹانےکی کوشش کر رہا ہے۔ اعلامیے میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ عمران خان آئین پاکستان، عوام کے حق حکمرانی اور جمہوری نظام کو بھی معیشت کی طرح دیوالیہ کرانا چاہتے ہیں، عمران خان کی سوچ اور رویہ پاکستان کے ریاستی نظام کے لیے دیمک بن چکا ہے، ‎حکمران اتحادی اس عزم کا واشگاف اعادہ کرتے ہیں کہ آئین، جمہوریت اور عوام کے حق حکمرانی پر ہرگز کوئی سمجھوتہ نہیں ہو گا۔ مشترکہ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ہر فورم اور ہر میدان میں تمام اتحادی جماعتیں مل کر آگے بڑھیں گی اور فسطائیت کے سیاہ اندھیروں کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں