لندن میں چارافراد چاقو کے وار سے قتل،ایک شخص گرفتار

جنوب مشرقی لندن میں 4 افراد کو چاقو کے وار سے قتل کیے جانے کے بعد ایک شخص کو قتل کے شبے میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔میٹروپولیٹن پولیس نے بتایا کہ برمنسی میں ایک گھر میں گڑبڑ کی اطلاع کے بعد پولیس جائے وقوع پر پہنچی جہاں 3 خواتین اور ایک مرد زخمی حالت میں پائے گئے تھے۔گھر کے اندر پائے جانے والے چاروں افراد کو جائے وقوع پر ہی مردہ قرار دے دیا گیا۔ پولیس نے بتایا کہ ایک شخص کو قتل کے شبے میں گرفتار کر کے جنوبی لندن کے پولیس سٹیشن لے جایا گیا جہاں وہ زیر حراست ہے۔ پولیس کی جانب سے ایک بیان میں کہا گیا کہ ‘ہمارا خیال ہے کہ پانچوں افراد ایک دوسرے کو جانتے تھے، تفتیش ابھی ابتدائی مرحلے میں ہے’۔پولیس کو اتوار کی رات تقریباً ایک بج کر چالیس منٹ پر برمنسی میں ڈیلافورڈ روڈ پر واقع ایک گھر میں گڑبڑ کی اطلاع پر بلایا گیا۔پولیس افسران کو زبردستی گھر میں داخل ہونا پڑا جہاں انہوں نے چار 4 افراد کو چاقو کے وار سے زخمی حالت میں پایا۔ ایمرجنسی سروس کی کوششوں کے باوجود 3 خواتین اور ایک مرد سمیت چاروں افراد جائے وقوع پر ہی دم توڑ گئے۔ لندن کے میئر صادق خان نے واقعہ پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ‘یہ سن کر دل افسردہ ہے کہ کل رات ساؤتھ وارک میں ایک افسوسناک واقعے میں 3 خواتین اور ایک مرد ہلاک ہو گئے’۔ اپنی ٹوئٹ میں انہوں نے لکھا کہ ‘میری ہمدردی ان لوگوں کے خاندان اور دوستوں کے ساتھ ہیں جنہوں نے اس خوفناک جرم میں اپنے پیاروں کو کھو دیا ہے، واقعے کی تفتیش جاری ہے اور ایک شخص کو گرفتار بھی کر لیا گیا ہے’۔ میٹروپولیٹن پولیس کے ماہر کرائم یونٹ کے سراغ رساں معاملے کی تفتیش کر رہے ہیں، افسران مقتولین کے رشتہ داروں سے رابطہ کر رہے ہیں اور موت کی اصل وجہ کا تعین کرنے کے لیے پوسٹ مارٹم کے معائنے کرائے جائیں گے۔ خیال رہے کہ اس سے قبل بھی لندن میں چاقو سے حملے کے متعدد واقعات رپورٹ کیے جاچکے ہیں۔ زشہ سال فروری میں جنوبی لندن میں چاقو سے حملے کے سلسلہ وار 5 واقعات میں ایک شخص ہلاک اور 9 زخمی ہو گئے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں