لاس انجیلس میں پہلا فلمی میوزیم

کیڈمی آف موشن پکچرز کا میوزیم 30 ستمبر کو عوام کے لیے کھول دیا جائے گا۔ ہزار اسکوائر میٹر رقبے پر پھیلا یہ میوزیم دو عمارتوں پر مشتمل ہے جنہیں شیشے کا ایک پل آپس میں جوڑتا ہے جب کہ اس کے اندر دو تھیٹرز بھی موجود ہیں۔میوزیم میں فلموں کی یادگاروں کے علاوہ ہالی وڈ کے تنازعات کو بھی جگہ دی گئی ہے، جس میں ‘می ٹو’ جیسے تنازعات بھی شامل ہیں۔میوزیم کو اطالوی ڈیزائنر رینزو پیانو نے ڈیزائن کیا ہے جس کا اعلان 2012 میں کیا گیا تھا جس کا افتتاح 2016 میں کیا جانا تھا جو کہ تاخیر کا شکار ہو گیا تھا۔عالمی ادارے کے مطابق میوزیم کو ہالی وڈ کی مشہور پروڈکشن کمپنیز وارنر بروز، ڈزنی اور آن لائن اسٹریمنگ پلیٹ فارم نیٹ فلکس کی 39 کروڑ ڈالر کی فنڈنگ سے تیار کیا گیا ہے۔اکیڈمی میوزیم آف موشن پکچرز کے بورڈ آف ٹرسٹی کے رکن اور دو مرتبہ آسکر ایوارڈ اپنے نام کرنے والے اداکار ٹوم ہینکس اور امریکی اداکارہ اینا کینڈرک نے میوزیم کی پری اوپننگ کی تقریب میں شرکت کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں