غیرملکی سازش:عمران خان کےدعووں میں کوئی صداقت نہیں تھی،امریکا

امریکا نے ایک بار پھر زور دے کر کہا ہے کہ سابق وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے ان کی حکومت کے خاتمے میں واشنگٹن کے کردار کے الزامات میں کبھی کوئی صداقت اور سچائی نہیں تھی۔امریکا نے اس عزم کا بھی اعادہ کیا کہ ’غلط معلومات‘ اور ’پروپیگنڈے‘ کو پاکستان کے دوطرفہ تعلقات کی راہ میں رکاوٹ نہیں بننے دیا جائے گا۔امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان ویدانت پٹیل نے بدھ کے روز پریس بریفنگ کے دوران پی ٹی آئی چیئرمین کی جانب سے عائد کیے گئے الزامات سے بظاہر پیچھے ہٹنے والے نئے مؤقف سے متعلق سوال پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ اس بارے میں میرے پاس کہنے کے لیے کچھ نیا نہیں ہے، میں صرف اتنا کہوں گا جیسا کہ ہم پہلے بھی کہہ چکے کہ ایسا نہیں ہے، ان الزامات میں کوئی سچائی اور صداقت نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ امریکا، پاکستان کے ساتھ اپنے دیرینہ تعاون کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے اور ہمیشہ ایک خوشحال اور جمہوری پاکستان کو امریکی مفادات کے لیے اہم سمجھتا ہے، اس پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ امریکا کسی ایک پارٹی کے سیاست دان کو کسی دوسری سیاسی جماعت کے رہنما پر ترجیح نہیں دیتا۔انہوں نے کہا کہ ہم پرامن طور پر جمہوری، آئینی اور قانونی اصولوں کو برقراررکھنے کی حمایت کرتے ہیں، ان کا کہنا تھا کہ پاکستان سمیت اپنے قابل قدر پارٹنر کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کی راہ میں پروپیگنڈے، غلط اور گمراہ کن معلومات کو رکاوٹ نہیں بننے دیں گے۔جب ان سے مزید وضاحت کرنے کے لیے کہا گیا تو ویدانت پٹیل نے کہا کہ جیسا کہ ہم پہلے بھی کہہ چکے ہیں کہ ان الزامات میں کبھی کوئی سچائی اور کوئی صداقت نہیں تھی، لیکن میرے پاس اس کے علاوہ اس معاملے میں کہنے کے لیے کچھ بھی نیا نہیں ہے۔ پی ٹی آئی قیادت کی اسلام آباد میں امریکی سفیر سے ملاقات سے متعلق افواہوں کے حوالےسے وینڈنٹ پٹیل نے کہا کہ اس حوالے سے بھی میرے پاس کوئی معلومات نہیں ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں