عمران خان کی بلیک میلنگ تسلیم کرنا فوج کوکم زورکرنےکے مترادف ہوگا،وال اسٹریٹ جرنل

امریکی اخبار وال اسٹریٹ جرنل میں شائع مضمون میں کہا گیا ہےکہ عمران خان نے پاکستان کو تباہی کے دہانے پر لا کھڑا کیا ہے۔مضمون نگار نے لکھا کہ اگر فوج بکھرتی ہے تو اس کے بعد پاکستان بھی نہیں بچےگا، سینیئر فوجی افسر کو عوامی سطح پر نشانہ بنانا انتقامی کارروائی اور سول ملٹری تعلقات کو بڑا نقصان پہنچانےکے مترادف ہے۔اخبار کے مطابق عمران خان کا فوج کے لیے پیغام واضح ہےکہ میرے لیے نہیں کھیلو گے تو تمھیں ڈس کریڈٹ کرنےکے لیے ہر حد تک جاؤں گا، عمران خان کا طرز عمل صاف بتا رہا ہےکہ وہ بطور ادارہ فوج کو بدنامی کی حد تک لے جانا چاہتے ہیں۔ وال سٹریٹ جرنل کے مضمون میں لکھا گیا ہے کہ عمران خان کی بلیک میلنگ کے آگے سر جھکانا فوج کے لیے ایک برا آپشن ہوگا، موجودہ صورت حال میں فوجی قیادت کے سامنے چند اچھے آپشن بھی ہیں تاہم عمران خان کی بلیک میلنگ کو تسلیم کرنا ادارے کو کم زورکرنے کے مترادف ہوگا۔مضمون نگار کے مطابق پاکستان میں فوج کے کردار پر تنقید بھی کی جاتی ہے لیکن ملک کے لیے اس کی شان دار خدمات زیادہ اہم ہیں، یہ فوج ہی ہے جس نے بھارت سمیت دیگر پاکستان مخالفین کو مشکلات میں پھنسائے رکھا ہے اور فوج نے ایک غیر فعال ملک میں ایک فعال ادارے کے طور پر اپنے آپ کو منوایا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں