شوہرکےہاتھوں زندہ دفنائی گئی عورت فون گھڑی کی بدولت بچ گئی

امریکا کی ریاست واشنگٹن میں شوہر نے خاتون پر چاقو سے حملہ کرکے زندہ دفن کردیا لیکن خاتون نے حاضر دماغی سے کام لیتے ہوئے ہاتھ پر بندھی گھڑی سے ایمرجنسی سروس کو کال کی جس کی بدولت ان کی جان بچا لی گئی۔ یہ واقعہ 16 اکتوبر کو امریکی ریاست واشنگٹن میں پیش آیا، 53 سالہ چا کیونگ این نے اپنی بیوی 42 سالہ ینگ سوک این کے ہاتھ اور پاؤں ٹیپ کے ذریعے باندھ دیے اور چھری کے وار سے زخمی کرنے کے بعد اسے زندہ دفن کردیا۔ایمرجنسی آپریٹر نے پولیس کو بتایا کہ خاتون نے911 کو فون کیا لیکن ایسا لگ رہا تھا کہ خاتون کا منہ بند کیا گیا ہے اور وہ بات کرنے سے قاصر تھیں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ کال کے دوران پیچھے سے پیٹنے کی آوازیں آرہی ہیں لیکن کچھ دیر بعد خاموشی چھا گئی۔خاتون نے پولیس کو بتایا کہ اُن کا شوہر کے ساتھ طلاق اور پیسوں کے معاملہ پر جھگڑا ہوا تھا، جس کے بعد شوہر نے انہیں گھر سے نکل جانے کو کہا، خاتون نے بتایا کہ جب وہ اپنے کمرے میں گئیں تو ان کے شوہر نے ان کے سَر پر متعدد بار حملہ کیا اور زمین پر گرا دیا۔خاتون نے بتایا کہ شوہر نے اُن کے منہ پر پٹی باندھ دی اور کمرے سے چلا گیا، اسی دوران خاتون نے ’ایپل‘ گھڑی سے 911 پر کال کی، شوہر نے واپس آ کر انہیں گھسیٹا اور تشدد کا نشانہ بنایا۔خاتون نے مزید بتایا کہ ان کے شوہر کو اندازہ ہوگیا تھا کہ وہ ایپل کی گھڑی استعمال کررہی ہیں جس کے بعد شوہر نے خاتون کی گھڑی اور کلائی پر ہتھوڑے سے وار کیا جس سے وہ ناکارہ ہو گئی۔بعد ازاں ان کا شوہر انہیں وین میں بٹھا کر جنگل کے قریب لے گیا جہاں انہوں نے خاتون پر تشدد کیا اور زندہ دفنا دیا، خاتون نے پولیس کو بتایا کہ وہ زمین کے اندر صرف کچھ گھنٹوں کے لیےموجود تھی لیکن اپنی مدد آپ کے تحت نکلنے میں کامیاب ہو گئی۔پولیس کا کہنا ہے کہ خاتون کے شوہر کو 17 اکتوبر کو گرفتار کرلیا تھا، جبکہ جہاں خاتون کو دفنایا گیا وہاں سے ٹیپ، بال اور گھڑی کے ٹکڑے ملے تھے۔53 سالہ چا کیونگ این کے وکیل نے عدالت میں بتایا کہ ان کے مؤکل دماغی مسائل کا شکار ہیں لیکن 42 سالہ ینگ سوک نے عدالت سے استدعا کی کہ ان کی زندگی کو خطرہ لاحق ہے اس لیے ان کے شوہر کو جیل میں رکھا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں