شنگھائی میں لاک ڈاؤن کےدوران پہلی بار اموات رپورٹ

چینی حکام نے کہا ہے کہ مشرقی میگاسٹی میں تیزی سے پھیلنے والے اومیکرون کے لاکھوں کیسز ریکارڈ ہونے کے باوجود گزشتہ ماہ سخت لاک ڈاؤن شروع ہونے کے بعد سے شنگھائی میں کووڈ۔19 سے صرف تین افراد کی موت ہوئی ہے۔ حکام نے بتایا کہ یہ دو سال قبل ووہان میں وائرس کی لہر کے بعد رپورت ہونے والی پہلی موت ہے اور تین افراد کی عمریں 89 سے 91سال کے درمیان تھیں جن میں سے سبھی کو بنیادی صحت کے مسائل تھے اور انہیں کووِڈ کی ویکسین نہیں لگائی گئی تھی۔ بیجنگ کا اصرار ہے کہ سخت لاک ڈاؤن، بڑے پیمانے پر جانچ اور طویل قرنطینہ کی زیرو کووڈ پالیسی نے اموات اور صحت عامہ کے بحرانوں سے بچانے میں اہم کردار ادا کیا۔

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں