جیکولین فرنینڈس کو گرفتار نہ کرنے پر دہلی عدالت کا اظہارِ برہمی

اداکارہ جیکولین فرنینڈس کو منی لانڈرنگ کے کیس میں گرفتار نہ کیے جانے پر دہلی کی ایک عدالت نے شدید برہمی کا اظہار کیا ہے۔بھارتی دہلی کی ایک عدالت نے جیکولین فرنینڈس کی ضمانت کی شدید مخالفت کی ہے اور انفورسمنٹ ڈائریکٹریٹ کو دہلی کی ایک عدالت میں سخت سوالات کا سامنا کرنا پڑا۔عدالت نے تفتیشی ایجنسی سے سوال کیا کہ اداکارہ کو اب تک کیوں گرفتار نہیں کیا گیا جبکہ اس کیس سے جڑے دیگر افراد اس وقت جیل میں ہیں۔ جس پر عدالت میں انفورسمنٹ ڈائریکٹریٹ نے بتایا کہ جیکولین فرنینڈس نے ملک سے فرار ہونے کی کوشش کی اور وہ تفتیشی افسران کے ساتھ تعاون نہیں کررہی ہیں۔انفورسمنٹ ڈائریکٹریٹ نے کہا کہ ہم نے اپنی پوری زندگی میں 50 لاکھ روپے نقد نہیں دیکھے ہیں لیکن جیکولین نے تفریح ​​کے لیے 7.14 کروڑ روپے لوٹ لیے۔مالیاتی جرائم کی تحقیقات کرنے والی ایجنسی نے اس سے قبل اداکارہ کو ملک چھوڑنے سے روکنے کے لیے ائر پورٹ پر ایک الرٹ بھی جاری کیا تھا۔جیکولین فرنینڈس جوکہ اس وقت عبوری ضمانت پر ہیں، ان کی ضمانت کی درخواست پر عدالت آج اپنا فیصلہ سنائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں