بیٹی ظاہرنہ کرنےپرعمران خان کونااہل قراردینے کی درخواست ،سماعت 23 نومبر کو ہو گی

اسلام آباد ہائیکورٹ نے عمران خان کو مبینہ بیٹی ظاہر نہ کرنے پر نااہل قرار دینے کی درخواست پر سماعت کے لیے لارجر بینچ تشکیل دینے کی درخواست واپس لیے جانے کی بنیاد پر نمٹا دی، نااہلی پٹیشن پر سماعت اکیس نومبر کو ہوگی۔اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس عامرفاروق نے عمران خان نااہلی کیس میں درخواست گزار کی جانب سے دائر متفرق درخواست پرسماعت کی، جس میں سماعت سنگل بینچ کے بجائے لارجر بینچ میں کرنے کی استدعا کی گئی تھی۔درخواست گزار کے وکیل بیرسٹرعثمان عدالت میں پیش ہوئے اور کہا کہ لارجر بینچ کی تشکیل کی درخواست فی الوقت واپس لینا چاہتا ہوں، استدعا ہے کہ عمران خان نااہلی کی مرکزی پٹیشن پر آئندہ ہفتے سماعت کی جائے۔عدالت نے استدعا منظورکرتے ہوئے لارجر بینچ کی تشکیل کی درخواست نمٹا دی، جبکہ نااہلی کی مرکزی پٹیشن کو پیر کو سماعت کے لیے مقررکر دیا۔درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے گزشتہ عام انتخابات کے دوران کاغذات نامزدگی میں اپنی بیٹی ٹیریان جیڈ وائٹ کا ذکر نہیں کیا اور معلومات چھپائیں، لہٰذا جھوٹ بولنے اور معلومات چھپانے پرعمران خان کو بطور رکن اسمبلی نااہل قرار دیا جائے

اپنا تبصرہ بھیجیں