برطرف گورنرپنجاب نےاپنےہٹانےکےنوٹیفکیشن کوغیرآئینی قراردےکرمسترد کردیا

برطرف گورنر پنجاب عمر سرفراز چیمہ نے آئینی ماہرین سے مشاورت شروع کردی۔عمر سرفراز چیمہ کا کہنا ہےکہ صدر نے غیر معمولی حالات کے پیش نظرسمری مسترد کی، کیبنٹ ڈویژن نےمجھے ہٹانے کا غیر آئینی نوٹی فکیشن جاری کیا جس کو مسترد کرتا ہوں۔ انہوں نے مزید کہا کہ آئینی ماہرین سے مشاورت جاری ہے جلد آئندہ کےلائحہ عمل کا اعلان کروں گا۔دوسری جانب پنجاب حکومت کے ذرائع نے کہا ہےکہ عمر سرفراز چیمہ گورنر نہیں رہے اس لیے ان کو سکیورٹی نہیں دی جارہی۔علاوہ ازیں گورنر ہاؤس کے باہر رکاوٹیں کھڑی کردی گئیں اور پولیس کو ہائی الرٹ کردیاگیا ہے۔پولیس ذرائع کا کہنا ہےکہ عمر سرفراز چیمہ کو گورنر ہاؤس آنے پر داخلے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں