ایک کروڑ 86 لاکھ روپےواپس کریں،شہباز گل کی اہلیہ کو کامسیٹس یونیورسٹی کانوٹسں

شہباز گل کی اہلیہ اعزا اسد رسول کامسیٹس یونیورسٹی کی ایک کروڑ 86 لاکھ روپے کی نادہندہ نکلیں۔دستاویز کےمطابق پاکستان تحریک انصاف کے رہنما شہباز گل کی اہلیہ سرکاری خرچ پر 2011 میں پی ایچ ڈی کرنے امریکا گئیں لیکن 11سال بعد بھی واپس نا آئیں جس کے بعد کامسیٹس یونیورسٹی نے شہباز گل کی اہلیہ کو شو کاز نوٹس بھیج دیا۔دستاویز کےمطابق اعزا اسد رسول نے مارچ 2011 میں پی ایچ ڈی کے لیے سرکاری فنڈز سےاسکالرشپ لی، کامسیٹس یونیورسٹی نے سرکاری فنڈ سے 99 ہزار ڈالرز اور 85 ہزار روپے کی رقم فراہم کی، مسز شہبازگل نےکامسیٹس یونیورسٹی سے معاہدے کے تحت 2016 میں پی ایچ ڈی مکمل کرنا تھی اور معاہدے کے تحت ڈگری کے بعد اعزا اسد رسول نے واپس آ کر یونیورسٹی میں پڑھانا تھا۔ دستاویز کے مطابق معاہدے کی رو سے اب شہباز گل کی اہلیہ کو سرکاری فنڈز سے جاری رقم واپس کرنا ہے لیکن مسز شہبازگل نے یونیوسٹی میں اپنےکام کی رپورٹس نہیں دیں اور خطوط کےجواب دینا بند کردیے، وہ کامسیٹس یونیورسٹی کےنوٹسز کا جواب دینے سے بھی گریز کرتی رہیں۔دستاویز میں کہا گیا ہےکہ شہباز گل کی اہلیہ کو اس سرکاری رقم پر 25 فیصد جرمانہ بھی ادا کرنا ہے اور مجموعی طور پر اعزا اسد رسول کو تقریباً ایک کروڑ 86 لاکھ روپے یونیورسٹی کو ادا کرنا ہیں۔ دستاویز میں یونیورسٹی نے شہباز گل کی اہلیہ سے 99 ہزار ڈالرز کے سرکاری اخراجات کی واپسی کا مطالبہ کیا ہے۔ یونیورسٹی ذرائع کا کہنا ہےکہ شہبازگل اہلیہ کےخلاف کارروائی رکوانے کے لیے یونیورسٹی پر اثرانداز ہوتے رہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں