اسپین اوربرازیل میں منکی پاکس سےپہلی اموات،کیسز 18 ہزار ہوگئے

رواں برس مئی میں یورپی ملک اسپین سے شروع ہونے والی بیماری ’منکی پاکس‘ سے براعظم افریقہ سے باہر پہلی بار دو اموات ہوئی ہیں جب کہ مریضوں کی تعداد بڑھ کر 18 ہزار ہوگئی۔اسپین میں منکی پاکس سے پہلی موت 29 جولائی کو ہوئی، تاہم حکام نے مرنے والے مریض سے متعلق مزید تفصیلات جاری نہیں کیں۔اسپین یورپ میں منکی پاکس سے متاثر ہونے والا سب سے بڑا ملک ہے، جہاں متاثر مریضوں کی تعداد 4 ہزار 300 تک جا پہنچی ہے اور خیال کیا جاتا ہے کہ منکی پاکس کی تازہ شروعات وہیں سے ہی مئی میں ہوئی تھی۔ہسپانوی حکام کے مطابق منکی پاکس سے متاثر افراد میں سے ساڑھے تین فیصد مریض ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں۔اسپین سے قبل امریکی ملک برازیل میں بھی منکی پاکس سے پہلی موت ہوئی تھی اور وہاں 41 سالہ مرد کئی دن زیر علاج رہنے کے بعد چل بسا۔’منکی پاکس کا مریض صوبے گراس پاؤس میں چل بسا جب کہ برازیل بھر میں بیماری سے متاثر افراد کی تعداد بڑھ کر ایک ہزار تک جا پہنچی ہے، جس میں سے سب سے زیادہ کیسز ساؤ پولو اور ریوڈی جنیرو میں ہیں۔ دونوں ممالک میں ہونے والی اموات براعظم افریقہ سے باہر ہونے والی پہلی اموات ہیں، اس سے قبل رواں ماہ جولائی کے وسط تک منکی پاکس سے افریقہ میں 5 اموات ہوئی تھیں۔

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں