اسلام آباد ہائیکورٹ نےحنیف عباسی کوبطورمعاون کام کرنےسےروک دیا

اسلام آباد ہائی کورٹ نے حنیف عباسی کو بطور معاون خصوصی کام کرنے سے روک دیا۔اسلام آبادہائی کورٹ میں 17 مئی کو حنیف عباسی کے عہدے سے متعلق شیخ رشید کی درخواست کی سماعت ہوئی۔اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دئیے کہ امیدہے کہ حنیف عباسی آئندہ سماعت تک عوامی عہدہ استعمال نہیں کریں گے،اس لئے حنیف عباسی کوعوامی عہدہ رکھنےسےروک رہےہیں۔چیف جسٹس اطہر من اللہ کے ریمارکس پر حنیف عباسی کے وکیل احسن بھون نے استدعا کی کہ معاون خصوصی پبلک آفس نہیں ہے،اس لئے کام سےنہ روکیں،میں معاونت کروں گا کہ معاون خصوصی کاعہدہ دیگر پبلک آفسز جیسانہیں ہے۔چیف جسٹس نے مزید کہا کہ عدالت توقع کرتی ہے کہ حنیف عباسی اپنا عہدہ استعمال نہیں کریں گے کیوں کہ ایک سزا یافتہ شخص پبلک عہدہ استعمال نہیں کرسکتا۔اگر بطور معاون وزیراعظم کو کوئی مشورہ دینا ہے تو بغیر نوٹیفیکیشن بھی ایسا کرسکتےہیں۔عدالت نے کیس کی سماعت 27 مئی تک ملتوی کردی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں